A Child’s Prayer by Muhammad Iqbal

لب پہ آتی ہے دعا بن کے تمنا میری
زندگی شمع کی صورت ہو خدایا میری

دور دنیا کا مرے دم سے اندھیرا ہو جائے
ہر جگہ میرے چمکنے سے اجالا ہو جائے

ہو مرے دم سے یونہی میرے وطن کی زینت
جس طرح پھول سے ہوتی ہے چمن کی زینت

زندگی ہو مری پروانے کی صورت یا رب
علم کی شمع سے ہو مجھ کو محبت یا رب

ہو مرا کام غریبوں کی حمایت کرنا
درد مندوں سے ضعیفوں سے محبت کرنا

مرے اللہ! برائی سے بچانا مجھ کو
نیک جو راہ ہو اس رہ پہ چلانا مجھ کو

My longing comes to my lips as supplication of mine O Allah! 
May like the candle be the life of mine O Allah!
May the world’s darkness disappear through the life of mine! 
May every place light up with the sparkling light of mine!
May my homeland through me attain elegance 
As the garden through flowers attains elegance.
May my life like that of the moth be, O Allah! 
May I love the lamp of knowledge, O Allah!
May supportive of the poor my life’s way be 
May loving the old, the suffering my way be.
O Allah! Protect me from the evil ways
Show me the path leading to the good ways!

About AnotherParaclete

Leave a Reply

%d bloggers like this: